الیکشن 2024: چاہت فتح علی خان نمبر 128 میں بلاول کا مقابلہ کریں گے۔

گلوکار کا کہنا ہے کہ وہ پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری سے مقابلہ کریں گے

۔Election 2024: NA-128 will see Chahat Fateh Ali Khan take on Bilawal

سوشل میڈیا سنسیشن چاہت فتح علی خان

واقعات کے حیران کن موڑ میں مقبول گلوکار اور سوشل میڈیا سنسیشن چاہت فتح علی خان نے سیاسی رنگ میں اپنی ٹوپی پھینک دی ہے۔

معروف گلوکار نے مبینہ طور پر آئندہ قومی اسمبلی کے انتخابات کے لیے لاہور کے حلقہ این اے 128 سے کاغذات نامزدگی جم کرائے ہیں، اس بات کا انکشاف انہوں نے سوشل میڈیا پر وائرل ہونے والی ویڈیو میں کی۔

ویڈیو میں سبز رنگ کی شلوار قمیض میں ملبوس گلوکار کو اپنے نرالا انداز میں ناظرین کا استقبال کرتے ہوئے دیکھا جا سکتا ہے۔ اس کے بعد وہ ویڈیو میں اعلان کرتے ہیں کہ انہوں نے لاہور میں قومی اسمبلی کے حلقہ این اے 128 کے لیے اپنے کاغذات نامزدگی جمع کرائے ہیں۔

چاہت، جس کا اصل نام کاشف رانا ہے، نے اپنے وکیل کے ہوتے ہوئے کاغذات نامزدگی جمع کرائے ہیں۔

یہ اقدام بہت سے لوگوں کے لیے صدمے کا باعث ہو سکتا ہے، کیونکہ چاہت فتح علی خان نے اپنا کیریئر دلکش دھنوں اور وائرل ویڈیوز پر بنایا ہے، جس کے یوٹیوب پر 1.9 ملین سے زیادہ سبسکرائبر ہیں۔ تاہم، ایسا لگتا ہے کہ کرشماتی گلوکار اب سیاسی عزائم کو پال رہا ہے، جس کا مقصد پارلیمانی نشستوں کے لیے مائیکروفون کی تجارت کرنا ہے۔

ان کی مہم سے متعلق تفصیلات بہت کم ہیں، کاغذات نامزدگی چاہت کے بجائے وکیل کے ذریعے جمع کرائے گئے۔ اس سے ان کی سیاسی امنگوں میں پراسراریت کا اضافہ ہوتا ہے، جس سے مداحوں اور ووٹروں کو یکساں طور پر حیرت ہوتی ہے کہ سیاست کی دنیا میں یہ غیرمتوقع حملہ کیا ہے۔

Election 2024: NA-128 will see Chahat Fateh Ali Khan take on Bilawal

NA-128 ایک گرما گرم انتخابی حلقہ ہے، جو کہ ووٹروں کے متنوع امتزاج اور سخت انتخابی لڑائیوں کے لیے جانا جاتا ہے۔ چاہت فتح علی خان کو سیاسی شخصیات اور تجربہ کار سابق فوجیوں کے خلاف سخت جنگ کا سامنا کرنا پڑے گا۔ صرف وقت ہی بتائے گا کہ آیا اس کی موسیقی کی دلکشی سیاسی کامیابی میں بدل سکتی ہے، یا یہ مہم محض عوامی عہدوں کے ساتھ چھیڑ چھاڑ ہے۔

چاہے چاہت فتح علی خان کا فیصلہ ایک حسابی اقدام ہو یا بے ساختہ تحریک، ایک بات طے ہے کہ سیاسی میدان میں ان کی آمد نے آنے والے انتخابات میں ایک انوکھا موڑ ڈالا ہے۔ کیا وہ سیاست میں ایک تازہ آواز بن کر ابھریں گے یا ان کا راگ قائم پارٹیوں کے ہنگاموں میں مدھم ہو جائے گا؟ صرف آنے والی انتخابی مہم اور حتمی ووٹوں کی گنتی ہی اس کا جواب دے گی۔

اپنی منفرد گانے کی ویڈیوز سوشل میڈیا پر وائرل ہونے والے برطانوی نژاد پاکستانی چاہت فتح علی خان نے عام انتخابات میں آزاد امیدوار کی حیثیت سے حصہ لینے کا فیصلہ کر لیا۔

چاہت نے قومی اسمبلی کی نشست کے لیے اپنے کاغذات نامزدگی جمع کرائے ہیں۔

اپنے مداحوں کو ایک بار پھر حیران کرتے ہوئے چاہت، جن کا اصل نام کاشف رانا ہے، نے لاہور کے حلقہ این اے 128 سے آزاد امیدوار کے طور پر کاغذات نامزدگی جمع کرادیے۔

وہ ‘چاہت فتح علی خان’ کے طور پر اپنی منفرد ویڈیوز کے لیے انٹرنیٹ پر گلوکاری کا سنسنی بن گیا، جس نے لاکھوں نیٹیزنز کو اپنی طرف متوجہ کیا۔

اس سال کے شروع میں، انہوں نے پاکستان سپر لیگ (پی ایس ایل) 8 اور آئی سی سی ورلڈ کپ 2023 کے ترانے بھی اپنے انداز میں گائے۔

چاہت پاکستان میں فرسٹ کلاس کرکٹر ہوا کرتا تھا۔

وہ قائداعظم ٹرافی کے 1983-84 کے سیزن میں لاہور کی ٹیم کا حصہ تھے۔ انہوں نے دو فرسٹ کلاس میچ کھیلے جس میں انہوں نے تین اننگز میں 16 رنز بنائے۔

بعد ازاں وہ بہتر مستقبل کی تلاش میں برطانیہ بھی چلا گیا۔ انہوں نے وہاں 12 سال تک کلب کرکٹ بھی کھیلی۔

عام انتخابات اگلے سال 8 فروری کو ہوں گے جب کہ کاغذات نامزدگی جمع کرانے کی تاریخ 24 دسمبر (اتوار) کو ختم ہو رہی ہے۔ اگلا مرحلہ الیکشن کمیشن آف پاکستان کے کاغذات کی جانچ پڑتال شروع کرنے کا ہے۔

Leave a Comment